انسان پر بڑھتی عمر کے اثرات

مصنف: اعجاز عالم | موضوع: صحت و تندرستی


جیسے جیسے انسان کی عمر بڑھتی ہے اس کے اثرات اسکے جسم اور صحت پر نمایاں ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔یہ ایک قدرتی عمل ہے اور ایسا دور ہر ایک کی زندگی میں ضرور آتا ہے۔ آئیے دیکھتے ہیں کہ جب انسان کی عمر بڑھتی ہے تو اسکے جسم اور صحت پر کیسے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

چہرے پر اثرات

اکثر حالات میں بڑھتی عمر کے اثرات چہرے پر جلد نمودار ہونا شروع ہو جاتے ہیں جن میں سے مندرجہ ذیل نمایاں ہیں:

1۔ عضلات میں کمزوری کی وجہ سے ٹھوڑی اور گردن کی جلد ڈھیلی ہو کر لٹکنا شروع ہو جاتی ہے۔
2۔ چونکہ جلد کے نیچے سے چربی پگھل جاتی ہے جسکی وجہ سے چہرے اور گردن کی جلد پتلی ہو جاتی ہے اور اس میں سے رگیں نمایاں ہونا شروع ہو جاتی ہیں۔
3۔ عمر کے بڑھنے سے جلد میں خشکی بڑھ جاتی ہے جسکی وجہ سے چہرے اور ماتھے پر جھریاں پڑنا شروع ہو جاتی ہیں۔
4۔ یہ بات مسلمہ ہے کہ یہ تمام اثرات ان لوگوں کی جلد پر جلدی اور نمایاں ہوتے ہیں جن کا زیادہ تر وقت دھوپ میں گزرتا رہا ہو۔ جو لوگ خود کو سورج کی شعاعوں سے خود کو بچائے رکھتے ہیں ان کی جلد پر بڑھتی عمر کے اثرات قدرے دیر سے غالب آتے ہیں۔

جسم پر اثرات

جسم پر بڑھتی عمر کے اثرات ایک قدرتی عمل ہے جن میں شامل ہیں:

1۔ 40 سال کی عمر کے بعد ایک عام شخص کا قد ہر دس سال بعد 1cm (0.4”) کم ہو جاتا ہے۔ 70 سال کے بعد قد میں کمی کی رفتار میں اضافہ ہو جاتا ہے۔ اگر کوئی شخص 70-80 سال تک زندہ رہتا ہے تو اس کے قد میں 1-3 انچ کی کمی متوقع ہوتی ہے۔
2۔ بڑھاپا شروع ہوتے ہی پیٹ اور کمر کے گرد چربی بڑھ جاتی ہے جس سے کولہے موٹے ہو جاتے ہیں۔
3۔ چونکہ عضلات اپنا تنائو کھونا شروع کر دیتے ہیں لہذا کندھوں کی چوڑائی کم ہو جاتی ہے اور ان میں جھکائو نمایاں ہونا شروع ہو جاتا ہے۔
4۔ پورے جسم میں عضلات میں کمی واقع ہونا شروع ہو جاتی ہے جس سے طاقت اور توانائی میں فرق پڑ جاتا ہے۔

بالوں پر اثرات

سفید بال اور بڑھاپا لازم و ملزوم سمجھے جاتے ہیں۔ کسی میں یہ تبدیلی جلدی واقع ہونا شروع ہو جاتی ہے اور کسی میں ذرا دیر سے۔ انسانی بالوں میں ایک عنصر ہوتا ہے جسے melanin کہتے ہیں جو کہ بالوں کے follicile میں پیدا ہوتا ہے اور بالوں کے رنگ کو کنٹرول کرتا ہے۔ جب انسان کی عمر بڑھتی ہے تو بالوں کے یہ follicile اس عنصر یعنی کہ melanin کو کم مقدار میں پیدا کرتے ہیں جسکی وجہ سے بال سفید ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔

بال سفید ہونے کے علاوہ بڑھاپا شروع ہوتے ہی بال کمزور ہونا بھی شروع ہو جاتے ہیں جسکی وجہ سے گنجا پن پیدا ہو جاتا ہے۔ اگر سر بالکل گنجا نہ بھی ہو تب بھی بالوں کی مقدار ضرور کم ہو جاتی ہے۔

ناخنوں پر اثرات

بڑھتی عمر کے ساتھ جہاں جسم کے دیگر اعضاء پر فرق پڑتا ہے وہاں ناخن بھی اس سے متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکتے۔ یہ ایک قدرتی عمل ہے جو ہر ایک میں عمر کے کسی نہ کسی حصے میں ضرور واقع ہوتا ہے۔

1۔ ناخنوں کی بڑھنے کی رفتار کم ہو جاتی ہے۔ (2) ناخنوں کی چمک دمک میں کمی واقع ہو جاتی ہے۔ (3) چند صورتوں میں ناخنوں میں کھردراہٹ بھی پیدا ہو جاتی ہے۔ (4) ناخنوں میں پیلاہٹ نمایاں ہونا شروع ہو جاتی ہے۔

اس کے علاوہ اگر ناخنوں کی شکل بگڑنا شروع ہو جائے یا وہ کٹے پھٹے سے لگنے لگیں تو ایسی صورت میں کسی ماہر ڈاکٹر سے مشورہ کرنا ضروری ہے۔

یہ وہ چند تبدیلیاں اور اثرات ہیں جو عمر بڑھنے کے ساتھ انسان میں رونما ہوتے ہیں۔ کسی میں یہ جلدی غالب آ جاتے ہیں اور کسی میں دیر سے۔ جو لوگ ایک مناسب اور نظم و ضبط سے بھر پور زندگی گزارتے ہیں وہ اس طرح کے اثرات سے محفوظ رہتے ہیں اور بڑھاپا طاری ہونے کے باوجود اپنی عمر سے کہیں کم کے لگتے ہیں۔

Share

You May Also Like

Add Your Thoughts