کامیاب زندگی کے لیے صحت کی اہمیت

مصنف: اعجاز عالم | موضوع: صحت و تندرستی


ایک خوش و خرم اور کامیاب زندگی کے لیے صحت کی اہمیت سے کوئی انکار نہیں کر سکتا، اگر آپکی صحت اچھی ہو گی اور آپ تندرست و توانا ہوں گے تو زندگی کی دوڑ میں بھر پور طریقے سے شامل ہو سکیں گے۔ اس لیے اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ اپنی زندگی کے ہر میدان میں کامیابی حاصل کریں تو کسی بھی صورت میں اپنی صحت سے غفلت نہ برتیں۔

کسی سیانے کا قول ہے کہ صحت مند جسم میں صحت مند دماغ پرورش پاتا ہے، اور یہ تو آپ مانیں گے کہ صحتمند اور ذہین دماغ ہی زندگی کے ہر شعبے میں کامیابی اور کامرانی حاصل کرتے ہیں۔ ایک بیمار، لاغر اور کمزور شخص نہ صرف گھر والوں پر بوجھ ہوتا ہے بلکہ وہ معاشرے میں بھی اپنا فعال کردار ادا کرنے سے قاصر رہتا ہے۔

اچھی صحت کے لیے آپ کو چند اہم باتوں کو اپنی زندگی اور لائف سٹائل کا حصہ بنانا پڑے گا اور اسکے لیے آپ کو کوئی خاص تردد بھی نہیں کرنا ۔ اس بات میں کوئی شک و شبہے کی گنجائش نہیں کہ ہمارا مذہب اسلام ایک مکمل ضابطئہ حیات ہے اور اگر ہم اس کے مطابق زندگی بسر کریں تو کوئی تکلیف ہمارے نزدیک نہیں آ سکتی۔

سادہ طرزِ حیات اپنانا، قوت بخش غذا کا استعمال، جسمانی مشقت، تفکرات و پریشانیوں سے خود کو بچانا، خوش و خرم رہنا، جسم کو مناسب آرام دینا، بری اور مضرِ صحت عادات سے دور رہنا اچھی صحت کے چند بنیادی اصول ہیں جن پر عمل کر کے آپ بہترین صحت حاصل کر سکتے ہیں۔

یہ عام سی باتیں ہیں جو آپ روزانہ ہی سنتے ہوں گے لیکن کبھی فرصت کے لمحات میں ان پر ذرا غور کیجئے کہ ان میں سے کتنی باتوں پر آپ صحیح معنوں میں عمل کرتے ہیں۔ صبح سویرے اٹھنا صحت مند زندگی کے لیے بہت اہم ہے لیکن ہم سے کتنے لوگ اس پر عمل کرتے ہیں؟ کسی نے کیا خوب بات کی ہے۔

رات کو سونا جلدی، صبح کو اٹھنا شباب، طاقت و صحت، عقل کو دے آب و تاب

اس مقولے کو انگلش میں تو آپ خوب پہچانتے ہوں گے، early to bed and early to rise, keeps a man healthy, wealthy and wise.اچھی صحت کے لیے قوت بخش مگر سادہ غذا کا استعمال ہم میں سے کتنے کرتے ہیں؟ وہی زبان کے چٹخارے، مرچ مصالحہ، گھی و چکنائی کا ستعمال، کولڈ ڈرنک، برگر، تلی ہوئی بازاری اشیا ہر ایک کے دسترخوان پر لازمی جگہ پاتے ہیں۔

کسرت و جسمانی مشقت کا رواج بالکل ختم ہوتا جا رہا ہے۔جدید ٹیکنالوجی کی آمد نے زندگی کو اتنا آسان بنا دیا ہے کہ جسمانی مشقت کی طرف کسی کا دھیان ہی نہیں جاتا۔ اسی وجہ سے عجیب و غریب بیماریوں کے نام سننے کو ملتے ہیں۔

صحت کی اہمیت اور قدر اس وقت محسوس ہوتی ہے جب انسان اسپتال کے بیڈ پر لیٹا ہوتا ہے، اس وقت پھر وہ سوچتا ہے کہ کاش میں نے اپنی صحت سے لاپرواہی نہ برتی ہوتی تو آج یہ نوبت نہ آتی۔

صحت کی اہمیت کو صرف کہنے سننے کی حد تک محدود نہ رکھیے بلکہ صحت کے تمام بنیادی اصولوں پر عمل کرتے ہوئے اسے اپنی روز مرہ روٹین اور زندگی کا حصہ بنائیے۔ اگر آپ خلوصِ دل سے ایک خوشگوار اور صحتمند زندگی گزارنے کی کوشش کریں گے تو اس میں ضرور کامیاب ہوں گے۔ اللہ تعالیٰ آپ کا حامی و ناصر ہو

Share

You May Also Like

Add Your Thoughts